...................... .................

ابوعزرائیل، جس کے نام سے دہشتگردوں پر لرزہ طاری ہو جاتا

تکفیری دہشت گرد گروہ داعش کے قاتل ابوعزرائیل پر مظاہروں کے دوران بعض نامعلوم افراد نے حملہ کرکے زخمی کردیا تھا جس کی تفصیل انہوں نےبیان کی ہیں۔
ایچ ٹی وی پاکستان کی رپورٹ کے مطابق، داعشی درندوں کے قاتل ابوعزرائیل کا کہنا ہے کہ میں مظاہرین سے اظہار یکجہتی کے لئے جب لوگوں کے درمیان پہنچا تو کچھ نامعلوم افراد نے شور مچانا شروع کیا ہے کہ اس نے متعدد مظاہرین کو نہایت بے دردی سے قتل کیا ہے۔ جس کے بعد متعدد مظاہرین مجھ پر حملہ آور ہوگئے۔
انہوں نے مذید کہا کہ بعض لوگ مظاہرین سے مطالبہ کررہے تھے فوری طور پر اس کا خاتمہ کرو۔
انہوں نے کہا ہم ملک میں پرامن مظاہروں کی حمایت کرتے ہیں۔ لیکن عوام کو ہوشیار رہنا چاہئے مظاہرین کے درمیان ملک دشمن عناصر کچھ بھی کرسکتے ہیں۔
واضح رہے کہ ابوعزرائیل نے عراق اور شام میں سینکڑوں تکفیری دہشت گردوں کا خاتمہ کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ داعشی دہشت گردوں پر ابوعزرائیل کا نام سن کر وحشت طاری ہوتی ہے۔

جواب لکھیں