...................... .................

بھارتی بے عقل اور بے دماغ قوم ہے: تحقیقی رپورٹ

رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ بھارتی شہریوں کے دماغ اونچائی، چوڑائی اور حجم میں مغربی اور دیگر مشرقی آبادیوں کے مقابلے میں کم ہیں۔
بھارت اور کینیڈین انفارمیشن ٹیکنالوجی کے محقیقین نے بھارتی شہریوں کے دماغ سے متعلق یہ اہم تحقیق کی جس میں انکشاف کیا گیا کہ بھارتیوں کے دماغ دنیا میں سب سے زیادہ چھوٹے ہوتے ہیں۔
بھارتیوں کے دماغ سے متعلق یہ تحقیق ”نیورو سائنس انڈیا “ جریدے میں شائع کی گئی۔
مطالعے میں کینیڈا کی میک گِل یونیورسٹی کے محقق راگھو مہتا، حیدرآباد کے بین الاقوامی انسٹی ٹیوٹ آف انفارمیشن ٹیکنالوجی کے جیانتھی سواسوامی اور الفن جے تھٹوپٹو، اور کیرالہ کے سری چترا تیرونل انسٹی ٹیوٹ میڈیکل سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے آر شیلاکماری اور چندر شیکرن کیسواڈس کی مشترکہ کوشش تھی۔
بھارت کے باشندوں کے لیے پہلا دماغی اٹلس تشکیل دینے کے بعد کہا کہ بھارتیوں کے دماغ چینی اور کاکیشین سمیت دنیا کے دیگر ممالک کے شہریوں کے مقابلے میں چھوٹے ہیں۔
شکل اور جسامت کے لحاظ سے بھی ان کے دماغ چینی، کوریائی اور کاکیشین باشندوں کے دماغ میں ایک خاص فرق ہے تاہم اس مطالعے میں یہ انکشاف نہیں ہوا کہ دماغی سائز میں فرق کی وجہ سے کیا ان آبادیوں میں بھی آپس میں تفریق ہوسکتی ہے۔
محققین نے صحت مند 100 بھارتی نوجوانوں کے دماغی اسکین سے اٹلس تیار کی جن میں 21 سے 30 سال عمر کی نصف خواتین شامل تھیں۔
مطالعہ کے مطابق دماغی اٹلس محققین کو دماغی امیجنگ کے مختلف طریقوں جیسے آیم آر آئی اور فنکشنل ایم آر آئی، یا صحت مند اور بیمار دماغی حالتوں کے درمیان یا افراد کے درمیان موازنہ کرنے میں مدد کرتا ہے۔
کینیڈا میں مونٹریال نیورولوجیکل انسٹی ٹیوٹ اور بین الاقوامی کنسورشیم برائے دماغ میپنگ (آئی سی بی ایم) نے 305 نوجوانوں کے دماغی ایم آر آئی اسکینوں کا استعمال کرتے ہوئے دنیا کا پہلا ڈیجیٹل انسانی دماغ اٹلس تشکیل دیا۔

جواب لکھیں

%d bloggers like this: