...................... .................

نواز شریف کے بعد آصف زرداری کے بھی پلیٹ لیٹس کم ہونے لگے

نواز شریف کے بعد پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کے بھی پلیٹ لیٹس کم ہونے لگے، ان کے پلیٹ لیٹس کی تعداد 90 ہزار رہ گئی۔
اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کے پلیٹس لیٹس کی تعداد 90 ہزار رہ گئی ہے، 2 روز میں ان کے پلیٹ لیٹس کی تعداد میں 21 ہزار کی کمی ہوئی ہے۔
اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ 23 اکتوبر کو آصف زرداری کے پلیٹ لیٹس کی تعداد ایک لاکھ 11 ہزار تھی تاہم میڈیکل بورڈ ان کے پلیٹ لیٹس میں کمی کے باوجود پر امید ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ عارضہ قلب کے مریض کے پلیٹ لیٹس میں کمی معمول کا حصہ ہے، پلیٹ لیٹس کی تعداد 50 ہزار سے کم ہونا تشویش ناک ہوتا ہے۔
پمز اسپتال کے 4 رکنی میڈیکل بورڈ نے آصف زرداری کا تفصیلی معائنہ کیا ہے، میڈیکل بورڈ نے پلیٹ لیٹس معمول پر لانے کے لیے ادویات تجویز کردیں۔
ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ پلیٹ لیٹس میں کمی زیر استعمال بعض ادویات کا ردعمل ہوسکتی ہیں، آصف زرداری کے عارضہ قلب کی ادویات میں ردوبدل پر غور شروع کردیا گیا ہے۔
اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کا بلڈ پریشر نارمل ہے لیکن شوگر لیول معمول پر نہیں آسکا ہے، ان کا نہارمنہ، کھانے کے بعد شوگر لیول معمول سے زیادہ ہے، ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ شوگر نارمل کرنے کے لیے انسولین کی مقدار میں ردوبدل کی ہدایت کردی گئی ہے۔
ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کا کولیسٹرول، پروٹین لیول معمول سے کم ہے، نیورولوجسٹ کی ہدایت پر سابق صدر کا این سی ایس ٹیسٹ کرلیا گیا ہے، ٹیسٹ کا مقصد ان کی اعصابی کمزوری کا اندازہ لگانا ہے۔
اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق صدر کو جسمانی کمزوری اور ڈپریشن کی شکایت کے بعد فزیو تھراپی شروع کرادی گئی ہے، ایک ہفتے تک ان کی فزیو تھراپی باقاعدگی سے کرائی جائے گی، وہ پرہیز کے بارے میں ڈاکٹرز کی ہدایت پر سختی سے عمل کررہے ہیں۔

جواب لکھیں

%d bloggers like this: