...................... .................

سکھوں کی مولانا فضل الرحمن سے مارچ ملتوی کرنے کی اپیل

برطانیہ سے تعلق رکھنے والے سکھ برادری کے ایک گروپ نے جمعیت علمائے اسلام (ف) سے اپیل کی ہے کہ وہ27 اکتوبر کو آزادی مارچ کا پروگرام ملتوی کر دیں۔
ایچ ٹی وی پاکستان کے مطابق برطانیہ سے سکھ برادری کے ایک گروپ نے جمعیت علمائے اسلام (ف) سے اپیل کی ہے کہ وہ27 اکتوبر کو آزادی مارچ کا پروگرام ملتوی کر دیں کیونکہ برطانیہ سے تعلق رکھنے والے 200سکھوں کے ایک وفد نے پاکستان میں بدامنی کے خوف سے ننکانہ صاحب کا اپنا دورہ منسوخ کردیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق سکھ مذہب کے بانی اور روحانی پیشوا بابا گرو نانک کے550ویں یوم پیدائش کی تین روزہ تقریب میں شرکت کے لیے سکھ افراد ہزاروں کی تعداد میں پاکستان آرہے ہیں جبکہ پاکستان کی مذہبی سیاسی جماعت جے یو آئی (ف) 27اکتوبر کو عمران خان کی حکومت کو اقتدار سے ہٹانے کے لیے مارچ کا آغاز کر رہی ہے۔ جس پر سکھ رہنماوں نے ننکانہ صاحب سے تعلق رکھنے والے دیگر برادری کے حمایت یافتہ ممبروں کی طرف بیان جاری کیا ہے کہ برطانیہ سے تعلق رکھنے والے 200سکھوں کے ایک گروپ نے پاکستان میں بدامنی کے خوف سے ننکانہ صاحب کا اپنا دورہ منسوخ کردیا ہے۔
انہوں نے کہاکہ ہمیں برطانیہ سے ای میل پیغامات اور فون کال موصول ہوئے ہیں کہ 200رکنی سکھ گروپ نے اپنا پروگرام منسوخ کردیا جو تشویشناک ہے۔ انہوں نے کہا ہم ہاتھ جوڑ کر فضل الرحمن سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ آزادی مارچ منسوخ کریں، اور اگر نہیں تو براہ کرم اسے 20نومبر تک ملتوی کردیں تاکہ پوری دنیا کے سکھ بے خوف ہوکر بابا نانک کا 550ویں یوم پیدائش منانے کے لئے پاکستان کا دورہ کرسکیں۔
یاد رہے کہ جہاں ایک طرف جے یو آئی (ف) آزادی مارچ کرنے کا پکا فیصلہ کر چکی ہے وہیں حکومت نے بھی اس مارچ کو روکنے کے لئے کمر کس لی ہے اور پکڑ دھکڑ کا بھی سلسلہ شروع ہو چکا ہے۔

جواب لکھیں