...................... .................

اسلام فوبیا کے مقابلے میں سہ ملکی اشتراک سے نیا ٹی وی چینل

وزیراعظم عمران خان، طیب اردگان اور مہاتیر محمد نے مل کر ایک انگریزی ٹی وی چینل کے قیام پر اتفاق کیا ہے جس پر اسلام کے حوالے سے غلط فہمیوں کا جواب دیا جائے گا۔
ایچ ٹی وی پاکستان کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے ٹویٹ کے ذریعے کہا ہے کہ ترکی، ملائیشیا اور پاکستان مشترکہ طور پر انگریزی چینل کھولیں گے۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے بتایا کہ ان کی ترک صدر رجب طیب اردگان اور ملائیشین وزیراعظم مہاتیر محمد سے میٹنگ ہوئی ہے جس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ تینوں ممالک مل کر انگریزی زبان کا ایک چینل شروع کریں گے۔ اس چینل کا مقصد اسلامو فوبیا کا مقابلہ کرنا اور اسلام جیسے عظیم دین کے حوالے سے پھیلنے والی غلط فہمیوں کی درستی کرنا ہوگا۔ انھوں نے کہا ایسی تمام غلط فہمیوں کا ازالہ کیا جائے گا جو لوگوں کو مسلمانوں کے خلاف یک جا کرتی ہیں۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اس چینل کے ذریعے ایسی غلط فہمیاں جو لوگوں کے مسلمانوں کے خلاف کرتی ہیں ان کو دور کیا جائے گا، توہین رسالت کے معاملے پر باقاعدہ طور پر آگاہی پھیلائی جائے گی۔ اس قسم کے ٹی وی ڈرامے اور فلمیں بنائی جائیں گی جو مسلمانوں کی تاریخ کے بارے میں مسلمانوں اور پوری دنیا کے لوگوں کو آگاہ کریں۔ اس چینل کے ذریعے عالمی میڈیا میں مسلمانوں کی باضابطہ نمائندگی کی جائے گی۔
یاد رہے کہ امریکا میں پاکستان، ملائیشیا اور ترکی نے مشترکہ طور پر اقوام متحدہ ہیڈ کوارٹرز میں ’نفرت انگیز تقاریر‘ کی روک تھام کے سلسلے میں ایک اہم کانفرنس کا انعقاد کیا تھا جس وزیر اعظم عمران خان نے کہا مذہب کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
اسی نکتے کو واضح کرنے کے لئے عمران خان، طیب اردگان اور مہاتیر محمد نے مل کر ایک انگریزی ٹی وی چینل کے قیام پر اتفاق کیا ہے جس پر اسلام کے حوالے سے غلط فہمیوں کا جواب دیا جائے گا۔

جواب لکھیں

%d bloggers like this: